Home Crime اورنگی ٹاؤن میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے 4 بچوں کی ماں جاں بحق

اورنگی ٹاؤن میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے 4 بچوں کی ماں جاں بحق

by admin
Spread the love

کراچی ویسٹ زون کے علاقے اورنگی ٹاؤن بہار کالونی میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے 4 بچوں کی ماں جاں بحق ہو گئی ، 3 روز کے دوران ویسٹ زون کے علاقوں نیو کراچی ، سرجانی اور اور نگی ٹاؤن میں خاتون سمیت 3 افراد زندگی کی بازی ہار گئے ، رواں سال 46 افراد ڈاکوؤں کی سفاکانہ فائرنگ کا نشانہ بن کر زندگی کی بازی ہار گئے ، درجنوں شہری زخمی بھی ہوئے ہیں، تفصیلات کے مطابق ویسٹ زون کے علاقے اورنگی ٹاؤن نیو قطر اسپتال کی گلی میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے خاتون جاں بحق ہو گئی جس کی لاش عباسی شہید اسپتال لائی گئی، مقتولہ کی شناخت 50 سالہ نازیہ انجم کے نام سے کی گئی، مقتولہ کے شوہر عبد الجبار نے بتایا کہ وہ اہلیہ کے ہمراہ اسپتال میں 2 زیر علاج سالی کی عیادت کے لیے آئے تھے اور موٹر سائیکل پارکنگ ایریا میں کھڑی کی تو موٹر سائیکل سوار ڈاکوؤں نے اپنے تعاقب میں آنے والے پولیس اہلکاروں پر فائرنگ کر رہے تھے کہ جس میں سے ایک گولی میری اہلیہ کی گردن پر آکر لگی اور وہ موقع پر ہی دم توڑ گئی، ڈاکوؤں کی فائرنگ کی بھینٹ چڑھنے والی مقتولہ خاتون نازیہ انجم 4 بچوں کی ماں تھی ، مقتولہ کے شوہر نے بتایا کہ وہ مقامی فیکٹری میں ملازمت کرتا ہوں ، علاقے میں ڈکیتی و رہزنی کی وارداتیں بڑھ گئی ہیں اب تو ڈا کو کسی کی جان لینے سے بھی دریغ نہیں کر رہے، اسپتال میں مقتولہ کے بیٹے نے ہاتھ جوڑ کر زار و قطار روتے ہوئے کہا کہ حکام سے اپیل کی ہے کہ میری ماں کے قاتلوں کو گرفتار کیا جائے اور ایسا ایکشن ہونا چاہیے کہ جو واقعہ میری والدہ کے ساتھ پیش آیا ہے وہ کسی اور کے ساتھ نہ پیش آئے، نازیہ انجم کی ہلاکت کی اطلاع گھر پہنچی تو تو کہرام مچ گیا، خواتین شدت غم سے نڈھال ہو گئی ، اہل محلہ اور رشتے داروں کی بڑی تعداد ان کی رہائش گاہ پہنچ گئی ، علاقے میں دندناتے ہوئے ڈاکوؤں اور ان کی فائرنگ سے مکینوں کے جان سے جانے اور زخمی ہونے کے واقعات پر شدید غم و غصے کا اظہار کیا، پولیس نے مقتولہ کی لاش ورثا کے حوالے کر دی، ایس ایچ او اورنگی ٹاؤن رضوان پٹیل نے بتایا کہ ابتدائی طور پر معلوم ہوا ہے موٹر سائیکل سوار دونوں ڈاکو پینٹ شرٹ پہنے ہوئے تھے اور ان کی عمریں 20 سے 22 سالہ کے درمیان معلوم ہوتی ہیں، ڈاکو واردات کر کے فرار ہو رہے تھے کہ ان کا پولیس اہلکاروں نے تعاقب کیا، پولیس کو آتا دیکھ کر گرفتاری کے خوف سے فائرنگ شروع کر دی جس کے باعث یہ افسوس ناک واقعہ پیش آیا، پولیس علاقے میں نصب کلوز سرکٹ کیمروں کو تلاش کر رہی ہے جن کی فوٹیجز کی مدد سے ڈاکوؤں کی شناخت کے حوالے سے کوششیں کی جارہی ہیں اور جلد ہی انھیں گرفتار کر لیا جائیگا، رضوان پٹیل نے بتایا کہ مقتولہ منگھو پیر اجتماع گاہ گیٹ نمبر 7 کے قریب آبادی کی رہائشی تھی جس کی نماز جنازہ بعد نماز عشا ادا کر دی گئی بعد ازاں 14 سی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا

You may also like

Leave a Comment