میرا کراچینمایاں

سندھ میں کیسز بڑھ رہے ہیں، صوبے میں نرمی کرنا مشکل لگ رہا ہے،مرادعلی شاہ

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیر صدات کورونا وائرس کے صوبائی ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا، جس میں صوبائی وزراء، چیف سیکریٹری، آئی جی پولیس، ایڈیشنل چیف سیکریٹری داخلہ، کمشنر کراچی، ایڈیشنل آئی جی کراچی، کور فائیو، رینجرز اور ڈبلیو ایچ او کے نمائندے بھی شریک ہوئے۔

مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ  کل 20421 ریکارڈ کورونا ٹیسٹ کیے گئے جس میں 9000 صرف کراچی کے تھے، ان میں سے 2 ہزار 76 کیسز مثبت آئے جو 10 اعشاریہ 2 فیصد ہے، صرف کراچی میں 16 اعشاریہ 82 فیصد کیسز مثبت آئے

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ عید الفطر 13 مئی کو ہوئی اس دن صوبے میں 1232 کیسز تھے، عید کے بعد 19 مئی کو 2076 کیسز آئے جو 10.2 فیصد ہیں، اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ سندھ میں کیسز بڑھ رہے ہیں، ہمیں صوبے میں نرمی کرنا مشکل ہوتا ہوا لگ رہا ہے۔

ترجمان وزیراعلیٰ سندھ کے مطابق ٹاسک فورس کے ممبران اور ماہرین نے وزیراعلیٰ سندھ کو موجودہ بندش کو جاری رکھنے کا مشورہ دیا، اور کہا کہ ہوسکے تو مزید سخت فیصلے کریں۔ اجلاس میں ٹاسک فورس نے حالیہ بندشوں کو برقرار رکھنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔

ترجمان نے بتایا کہ ہفتے کو ٹاسک فورس کا دوبارہ اجلاس ہوگا، جس میں صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا، اگر کیسز کی شرح کم ہوئی تو نرمی اور اگر بڑھ گئے تو مزید سختی کریں گے۔ وزیراعلیٰ سندھ نے ٹاسک فورس کے ممبران کو ہدایت کی کہ صورتحال کا جائزہ لیکر مزید اقدامات کے لئے اپنی تجاویز دیں۔ جب کہ ڈبلیو ایچ او کے نمائندے بھی ہفتے کے اجلاس میں اپنی سفارشات دیں گے۔

Tags
Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Close
Close