میرا کراچی

کولڈاسٹوریج فیکٹری دھماکہ، ڈپٹی کمشنر وایڈمنسٹریٹر ضلع وسطی ڈاکٹر محمد بخش دھاریجو کا ملبہ ہٹانے اور امدادی کاروائیوں کا جائزہ

نیو کراچی صنعتی ایریا میں کولڈاسٹوریج فیکٹری میں گزشتہ رات ہونے والے دھماکے کے نتیجے میں ملبے تلے دب کر 10 افراد ہلاک اور 30 افراد زخمی ہوئے جبکہ دھماکے سے متعدد گاڑیاں، موٹر سائیکلیں اور اطراف کی دیگر فیکٹریاں بھی شدید متاثر ہوئی۔دھماکے کے وجوہات کا تعین کیا جارہا ہے ریسکیو آپریشن مستقل جاری ہے۔ڈپٹی کمشنر وایڈمنسٹریٹر ضلع وسطی ڈاکٹر محمد بخش دھاریجو،میونسپل کمشنر بلدیہ وسطی سیمراحسین ملبہ ہٹانے اور امدادی کاروائیوں میں مصروف ہیں جبکہ زخمیوں کو ہسپتال منتقل کردیا گیا جہاں زخمیوں کا علاج جاری ہے۔ریسکیو آپریشن کے دوران کل رات گئے تک ملبے میں دبی 9 افراد کی لاشیں نکالی گئی جبکہ آج صبح شروع کئے جانے والے آپریشن میں ملبے سے ایک اور لاش نکالی گئی اس طرح مجموعی ہلاکتوں کی تعداد 10 ہوگئی ہے۔مذکورہ فیکٹری میں دھماکے سے پوری عمارت منہدم ہوگئی دھماکے کی شدت اتنی زیادہ تھی کہ آس پاس کی عمارتیں لرز اٹھی جبکہ آس پاس کی چار عمارتوں کی دیواریں بھی گر گئی جبکہ قریب ہی لگی PMT تو تقریباً 100 فٹ کے فاصلے پر جاگری دھماکے کے نتیجے میں عمارت کا ملبہ قریب کھڑی گاڑیوں پر گرا جس کی وجہ سے گاڑیاں مکمل تباہ ہوگئی۔واضح رہے کہ ڈپٹی کمشنر و ایڈمنسٹریٹر ضلع وسطی نے دھماکے کی اطلاع ملتے ہی فوری طور پر بلدیہ وسطی کے محکمہ بی اینڈ آر اور محکمہ صحت و صفائی کے عملے کو امدادی کاروائیوں کے لئے روانہ کیا اور خود بھی رات گئے تک امدادی کاروائیوں کی نگرانی میں مصروف رہے اس دوران انہوں نے زخمیوں کو ہسپتال روانہ کیا،ڈاکٹر دھاریجو نے زخمیوں کے علاج پر بھرپور توجہ دینے پر زور دیا مزید برآں فیکٹری میں حادثے کے بعد تمام رات ڈپٹی کمشنر و ایڈمنسٹریٹر ڈاکٹر دھاریجو،میونسپل کمشنر سیمرا حسین اور دیگر بلدیاتی افسران و کارکنان ہلکی اور بھاری مشینری کے ذریعے ملبہ ہٹانے اور امدادی کاموں میں مصروف رہے تاہم شدید سردی اور رات کی وجہ سے امدادی کاموں اور ملبہ ہٹانے میں دشواری کا سامنا تھا تاہم جمعرات کی صبح دوبارہ آپریش شروع کیا گیا جو تاحال جاری ہے۔بلدیہ وسطی کی جانب سے کئے جانے والے آپریشن کے نتیجے میں تقریباً 80 فیصد فیکٹری کے باہر کا ملبہ ہٹایا جاچکا ہے۔پولیس زرائع کے مطابق د ھماکے میں جابحق 9 افراد کی شناخت کر لی گئی،جابحق افراد میں مبشیر، محسن، عبدالوحید،فضل کریم، نعیم، سنی،محمد رمضان،یوسف،سلیم شامل ہیں جبکہ میتیں ورثا کے حوالے کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Close
Close