میرا کراچینمایاں

کراچی کو جدید ماس ٹرانزٹ نظام کی ضرورت ہے

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے سپریم کورٹ میں جواب جمع کراتے ہوئے کہا ہے عدالت حکم دے تو کراچی کے جدید سرکولر ریلوے کیلئے تین ارب دینے کو تیار ہیں۔

 وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے سرکولر ریلوے کیس میں جواب جمع کروا دیا ہے. وزیراعلی   نے توہین عدالت کا نوٹس واپس لینے کی استدعا کرتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی سرکولر ریلوے کی فزیبلٹی رپورٹ تین ماہ میں بنی، وفاقی کی سستی کے باوجود سندھ حکومت نے منصوبے پر تیزی سے کام کیا، وفاقی حکومت نے 2017 میں سرکولر ریلوے میں دلچسپی لینا چھوڑ دی تھی۔

مراد علی شاہ نے کہا کہ محکمہ ٹرانسپورٹ نے 14 نومبر کو سمری کابینہ میں پیش کی، تاہم میں کورونا کا شکار تھا اس لئے کابینہ کی میٹنگ ملتوی ہوگئی، ایف ڈبلیو او کو ایک کروڑ روپے جاری کرنے کی منظوری دی، 9 دسمبر کو ایف ڈبلیو او کو بقیہ 15 کروڑ بھی جاری کرنے کی منظوری دی۔

جواب میں وزیراعلیٰ سندھ  کی جانب سے کہا گیا ہے کہ کراچی کو جدید ماس ٹرانزٹ نظام کی ضرورت ہے، سرکولر ریلوے کو ایسے بحال کیا جائے کہ جدید ماس ٹرانزٹ نظام متاثر نہ ہو، عدالت حکم دے تو جدید سرکولر ریلوے کیلئے تین ارب دینے کو تیار ہیں۔

Tags
Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Close
Close