Home Karachi کراچی کے نوجوانوں کو چند ہزار روپے کے پیچھے مارا جارہا ہے

کراچی کے نوجوانوں کو چند ہزار روپے کے پیچھے مارا جارہا ہے

by admin
Spread the love

 ایم کیوایم رہنما فیصل سبزواری کا کہنا ہے کہ کراچی میں لوگوں کو مارا جاتا رہا تو ہر قسم کی حکومت چھوڑدیں گے۔ تفصیلات کے مطابق ایم کیوایم کے رہنما فیصل سبزواری نے میڈیا سے کرتے ہوئے سینیٹ انتخابات کے حوالے سے کہا کہ ایم کیوایم کےپاس سینیٹ کی ایک نشست کیلئےووٹ پورےہیں، فیصل واوڈ آزاد امیدوارہیں لیکن ایم کیوایم اور پی پی ارکان انھیں ووٹ دیں گے، امید ہے فیصل واوڈا سینیٹر منتخب ہو جائیں گے اور ووٹ ملنے پر ہمارا شکریہ اداکریں گے۔ فیصل سبزواری کا کہنا تھا کہ کراچی والےدیکھ رہےہیں کوئی بھی انتخابات ہوں مسائل کون حل کرے گا، پہلےہرٹارگٹ کلنگ کاالزام ایم کیوایم پر لگتا تھا اور ادارےحرکت میں آتے تھے،کراچی میں 3 ماہ کے دوران 50 شہری اسٹریٹ کرائم میں قتل کیے جا چکے ہیں۔

 وزیر داخلہ کے بیان پر رہنما ایم کیو ایم نے کہا کہ وزیرداخلہ کہتے ہیں کرائم اتنانہیں جتنابتایاجارہاہے، وزیرداخلہ عجیب بیانات دےرہےہیں، ضیا لنجار وزیر داخلہ ہیں وزیر مذاقیات نہیں، وہ مذاق نہ بنائیں، اتنی کلنگ کہیں اور ہوتی تو آپریشن کامطالبہ کرتے لیکن کراچی میں سیاسی جماعتوں کی جانب سے آپریشن کامطالبہ نہیں کیاجارہا۔ اسٹریٹ کرائمز کی وارداتوں پر ان کا کہنا تھا کہ کراچی کےنوجوانوں کوچندہزارروپےکےپیچھےماراجارہاہے، پی پی کے15سالہ دورمیں امن وامان بحال نہیں ہوا، ڈی جی رینجرز،آئی جی ،وفاقی وزارت داخلہ نوٹس لیں اور کراچی میں دوبارہ بیریئرزلگانے دیں۔ فیصل سبزواری نے مزید کہا کہ حکومت عوامی نمائندوں کو بٹھا کر نیبرہڈواچ سسٹم بنائے، کراچی کےحالات دوبارہ آپریشن کےمتقاضی ہیں، کراچی والوں کےپاس کچے کے ڈاکو جیسے ہتھیارنہیں ، پتہ نہیں کراچی میں آپریشن کیوں شروع نہیں کیاجارہا۔ وزیر داخلہ سندھ نے واضح کیا کہ ہمارے لوگوں کو مارا جاتا رہا اور نوٹس نہیں لیاتوہم ہرقسم کی حکومت چھوڑدیں گے۔ انھوں نے کہا کہ جس کے پاس ایک سے زیادہ پلاٹس ہیں ان پرٹیکس لگائیں، آئی ایم ایف سےمعاہدےحکومت کے نہیں ریاست کے ہوتےہیں، ملک ڈیفالٹ ہوگیا تو روٹی 200 روپے کی ہوجائے گی۔ گورنرسندھ کی تبدیلی کے سوال پر ایم کیو ایم کے رہنما کا کہنا تھا کہ گورنرسندھ کی تبدیلی کیلئےایم کیوایم کی طرف سے کوئی بات نہیں ہوئی۔

You may also like

Leave a Comment