قومینمایاں

موجودہ حکومت کے ڈھائی سال میں چھٹی بار بجلی کی قیمت میں اضاف

موجودہ حکومت کے ڈھائی سال میں چھٹی بار بجلی کی قیمت میں اضافہ کردیا گیا ۔
ذرائع کے مطابق حکومت نے بجلی مزید1 روپے 95 پیسے فی یونٹ مہنگی کرنے کا اعلان کردیا۔
موجودہ حکومت بجلی صارفین پر پہلے ہی 450 ارب روپے سے زائد کا اضافی بوجھ ڈال چکی ہے۔ قیمتوں میں حالیہ اضافے سے بجلی صارفین پر اب مزید 200 ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ بجلی مہنگی کرکے آئی ایم ایف کی شرط بھی پوری ہوجائے گی ۔ بجلی مزید مہنگی کرنے کا نوٹیفکیشن جلد جاری کیا جائے گا۔
اضافے کے بعد بجلی کا بنیادی ٹیرف 15 روپے 30 پیسے فی یونٹ ہوجائے گا ۔اس وقت بجلی کا بنیادی ٹیرف 13 روپے 35 پیسے فی یونٹ ہے ۔
موجودہ حکومت کے اقتدار سنبھالتے وقت بجلی کی قیمت 9روپے 50پیسے تھی۔ موجودہ حکومت اپنے دور اقتدار میں پہلے ہی بجلی 3 روپے 85 پیسے فی یونٹ مہنگی کرچکی ہے ۔
پہلی باربجلی یکم جنوری 2019کو ایک روپے 27 پیسے فی یونٹ مہنگی کی گئی تھی ۔ دوسری بار یکم جولائی 2019 کو بجلی ایک روپے 49 پیسے فی یونٹ مہنگی کی گئی ، تیسری بار 53 پیسے فی یونٹ ، چوتھی بار 30 پیسے فی یونٹ جبکہ پانچویں بار 26 پیسے فی یونٹ مہنگی کی گئی تھی

Tags
Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
Close
Close